Tuesday, December 07, 2010

Inflation to Maintain Double-Digit Growth

Inflation to Maintain Double-Digit Growth
 
 
 
 
 
 
 
 
Islamabad Tonight – 7th December 2010
Shahid Hafiz Kardar, Governor State Bank of Pakistan in Islamabad Tonight with Nadeem Malik
 

35-40 of the economy remains out of the tax net
Wealth Tax and Taxes on Real Estate should be considered
Value Added Tax is a good and modern system of taxation
Federal Government must reduce expenditures
Heavy borrowing for budget support crowd out private sector
Debt levels rising fast

 
 
http://www.awaztoday.com/playvideo.asp?pageId=11995
 
http://www.friendskorner.com/forum/f247/video-islamabad-tonight-7th-december-2010-a-210274/
 
Islamabad Tonight 7th December 2010
 
http://www.zemtv.com/2010/12/07/islamabad-tonight-7th-december-2010-governor-state-bank-of-pakistan/
 
How Taxpayers' Hard Earned Money Goes Down The Drain
 
* Rs 21 bln a month Electricity Subsidy
 
* Rs 284 bln for Wheat Procurement
 
* Rs 300 bln for Public Sector Enterprises
 
* Rs 2.6 Trillion (FY08-10) for Deficit Financing
 
* Rs 492 bln Non Performing Loans
 
www.nadeemmalik.pk


 
 

حکومت بجلی پر ہر مہینے اکیس ارب روپے کی سبسڈی دے رہی ہے-شاہد حفیظ کاردار

شرح سود بڑھانے کے باوجود افراط زر بہت زیادہ ہے-

مستقبل قریب میں افراط زر کی شرح ڈبل فگر میں ہی رہے گی-

حکومت اپنے اخراجات کم کرے وہ ایسا نہ کر کے زیادتی کر رہی ہے-

کپاس اور دوسری فصلیں کافی اچھی ہیں دیہات میں کافی پیسہ آئے گا-

کپاس کی قیمتوں میں تین گنا اضافہ ہو چکا ہے-

پچھلے ماہ بنکوں کے نان پرفارمنگ لونز کا حجم چار سو بانوے ارب روپے تھا-

عام آدمی کو ٹی بلز میں براہ راست سرمایہ کاری کی اجازت دے رہے ہیں-

پاکستانی بنک اسوقت سب سے زیادہ قرضے حکومت کو دے رہے ہیں-

حکومت پر صرف گندم کی خریداری کا دو سو چوراسی ارب روپے کا قرض ہے-

حکومت کی خریدی ہوئی اربوں روپے کی گندم کھلے آسمان کے نیچے پڑی ہے-

ہم غلط فہمی کا شکار ہیں کہ کوئی سفید گھوڑے پر آ کر چھڑی گھمائے گا اور سب کچھ ٹھیک ہو جائے گا-

ترقی کی رفتار تیز کرنے کے لیے سب کو قربانی دینے کی ضرورت ہے-

پراپرٹی ٹیکس نہ ہونے کے برابر ہے یہ لگنا چاہیے-

ملکی معیشت کا پینتیس سے چالیس فیصد تک ٹیکس نیٹ میں شامل نہیں ہے-

برآمدات اچھی توقعات ہیں امید ہے آئی ایم ایف سے قرض نہیں لینا پڑے گا-

اس سال پاکستان کی شرح ترقی دو اعشاریہ پانچ فیصد تک رہنے کا امکان ہے-

بجٹ میں خسارے کی شرح حکومت کے اندازہ چار اعشاریہ سات فیصد سے زیادہ رہے گی-

صوبائی حکومتوں کو اوورڈرافٹ کی لمٹ سے ایک پیسہ بھی زیادہ نہیں ملے گا-

مجھ پر حکومت یا وزیر خزانہ کا کوئی دباو نہیں ہے-

 
 
 
 
 
 
 
 
Islamabad Tonight – 7th December 2010
Shahid Hafiz Kardar, Governor State Bank of Pakistan in Islamabad Tonight with Nadeem Malik
 

35-40 of the economy remains out of the tax net
Wealth Tax and Taxes on Real Estate should be considered
Value Added Tax is a good and modern system of taxation
Federal Government must reduce expenditures
Heavy borrowing for budget support crowd out private sector
Debt levels rising fast

 
 
http://www.awaztoday.com/playvideo.asp?pageId=11995
 
http://www.friendskorner.com/forum/f247/video-islamabad-tonight-7th-december-2010-a-210274/
 
Islamabad Tonight 7th December 2010
 
http://www.zemtv.com/2010/12/07/islamabad-tonight-7th-december-2010-governor-state-bank-of-pakistan/
 
How Taxpayers' Hard Earned Money Goes Down The Drain
 
* Rs 21 bln a month Electricity Subsidy
 
* Rs 284 bln for Wheat Procurement
 
* Rs 300 bln for Public Sector Enterprises
 
* Rs 2.6 Trillion (FY08-10) for Deficit Financing
 
* Rs 492 bln Non Performing Loans
 
www.nadeemmalik.pk


 
 

حکومت بجلی پر ہر مہینے اکیس ارب روپے کی سبسڈی دے رہی ہے-شاہد حفیظ کاردار

شرح سود بڑھانے کے باوجود افراط زر بہت زیادہ ہے-

مستقبل قریب میں افراط زر کی شرح ڈبل فگر میں ہی رہے گی-

حکومت اپنے اخراجات کم کرے وہ ایسا نہ کر کے زیادتی کر رہی ہے-

کپاس اور دوسری فصلیں کافی اچھی ہیں دیہات میں کافی پیسہ آئے گا-

کپاس کی قیمتوں میں تین گنا اضافہ ہو چکا ہے-

پچھلے ماہ بنکوں کے نان پرفارمنگ لونز کا حجم چار سو بانوے ارب روپے تھا-

عام آدمی کو ٹی بلز میں براہ راست سرمایہ کاری کی اجازت دے رہے ہیں-

پاکستانی بنک اسوقت سب سے زیادہ قرضے حکومت کو دے رہے ہیں-

حکومت پر صرف گندم کی خریداری کا دو سو چوراسی ارب روپے کا قرض ہے-

حکومت کی خریدی ہوئی اربوں روپے کی گندم کھلے آسمان کے نیچے پڑی ہے-

ہم غلط فہمی کا شکار ہیں کہ کوئی سفید گھوڑے پر آ کر چھڑی گھمائے گا اور سب کچھ ٹھیک ہو جائے گا-

ترقی کی رفتار تیز کرنے کے لیے سب کو قربانی دینے کی ضرورت ہے-

پراپرٹی ٹیکس نہ ہونے کے برابر ہے یہ لگنا چاہیے-

ملکی معیشت کا پینتیس سے چالیس فیصد تک ٹیکس نیٹ میں شامل نہیں ہے-

برآمدات اچھی توقعات ہیں امید ہے آئی ایم ایف سے قرض نہیں لینا پڑے گا-

اس سال پاکستان کی شرح ترقی دو اعشاریہ پانچ فیصد تک رہنے کا امکان ہے-

بجٹ میں خسارے کی شرح حکومت کے اندازہ چار اعشاریہ سات فیصد سے زیادہ رہے گی-

صوبائی حکومتوں کو اوورڈرافٹ کی لمٹ سے ایک پیسہ بھی زیادہ نہیں ملے گا-

مجھ پر حکومت یا وزیر خزانہ کا کوئی دباو نہیں ہے-


 
-----------------------------------------------------------
N A D E E M    M A L I K 
http://www.nadeemmalik.pk
Facebook  



NADEEM MALIK ندیم ملک

NADEEM MALIK LIVE

NADEEM MALIK LIVE

Nadeem Malik Live is a flagship current affairs programme of Samaa.TV. The programme gives independent news analysis of the key events shaping future of Pakistan. A fast paced, well rounded programme covers almost every aspect, which should be a core element of a current affairs programme. Discussion with the most influential personalities in the federal capital and other leading lights of the country provides something to audience to help them come out with their own hard hitting opinions.


Blog Archive